Christchurch Mayor and New Zealand Prime Minster provide shooting update: New Zealand's Prime Min…

Christchurch Mayor and New Zealand Prime Minster provide shooting update: New Zealand's Prime Min…



Brenton Tarrant, charged with murder in Friday’s terrorist attack shootings at two mosques in New Zealand that killed 49 people, livestreamed his own rampage, the most deadly massacre in the nation’s history.

Tarrant is a 28-year-old white male with white supremacist views. He captured the deadly incident at Masjid Al Noor mosque in a 17-minute video taken on a helmet camera.

Here’s what we know about him:

Tarrant, 28, was born in nearby Australia, the country’s Prime Minster Scott Morrison confirmed, according to the New Zealand Herald. Morrision called Tarrant “an extremist, right-wing, violent terrorist.”

Media reports have found that Tarrant is from Grafton, a town of around 19,000 people in New South Wales, Australia. https://www.usatoday.com/story/news/nation/2019/03/15/new-zealand-christchurch-mosque-shootings-who-brenton-tarrant/3172550002/

source

About The Author

We are independent. we bring you the Real news from around the world.

Related posts

10 Comments

  1. Qasim Malik

    #نیوزی_لینڈ_مسجد_حملہ۔۔۔!!!

    جس شخص نے یہ حملہ کیا ہے اسکا نام ہے "برینٹ ٹیرینٹ"…!!!

    کوئی اسے دہشت گرد کہ رہا ہے کوئی کہ رہا یہ ایک زہنی
    مریض تھا اور کوئی کہ رہا ہے کہ یہ کسی بدلے کی آڑ میں میں کیا گیا ہے لیکن مسجد میں ہونے والے حملے کا منظر نامہ اس وقت کچھ اور ہی حقائق بیان کر رہا ہے ۔۔۔!!!

    اب آتے ہیں اصل حقائق پر سب سے پہلے جو گاڑی اس شخص کے پاس موجود ہے وہ نیوزیلینڈ میں رجسٹرڈ گاڑی ہے اس گاڑی کو یہ شخص اپنے ضروریات کے مطابق استعمال کرتا رہا ہے اگر گاڑی اتنی مہنگی رکھ سکتا ہے تو یقیناً اس کے پاس ایک اچھا گھر بھی ہو گا اور نیوزیلینڈ جیسے ملک میں ایک گاڑی اور گھر رکھنا پیسے والے لوگوں کا کام ہے۔۔۔!!!

    #دوسری طرف اگر آپ اس شخص کی جسامت کو نوٹ کریں تو اس شخص کے جسامت سے نظر آتا ہے یا تو یہ شخص ایک بہترین جمر ہے یا پھر ایکسرسائز اور فٹنس پر بھرپور توجہ دیتا رہا اور آپ جانتے ہیں اگر ایک جمر یا ایکسرسائزر اگر معمول کے مطابق اپنے فٹنس پر فوکس نہ کرے تو اسکی باڈی لینگویج تبدیل ہو جاتی ہے اور موٹاپے کا شکار ہو جاتا ہے ۔۔۔!!!!

    #تیسری اہم بات حملے کے لیے جس گن کا استعمال کیا گیا اس گن کا نام ہے آگسٹا جی اے اور یہ گن ایک شارٹ کام بیٹ کے لیے استعمال کی جاتی ہے اس گن کا وزن ہلکا اور سائیز چھوٹا ہونے کی وجہ سے تنگ جگہہ پر بھی اسکا استعمال باآسانی کیا جا سکتا ہے اور اس گن کو چلانے کے لیے مہارت آپ کو صرف اور صرف ایک باقاعدگی سے ٹریننگ کر کے حاصل ہوتی ہے اور یہ گن شارٹ کامبیٹ میں بہت افیکٹو ہوتی ہے اور یہ بات جاہل دہشتگرد نہی جانتے ۔۔۔!!!

    #تیسری بات میگزین جیکٹ اور دیگر میگزین ثابت کرتی ہیں کہ حملہ آور بڑے مقصد کے لیے آیا تھا اور کوشش میں تھا جتنا زیادہ جانی نقصان کیا جا سکے کرے اور اس قسم کی جیکٹ اور میگزین دہشتگردوں کے پاس نہی پائی جاتیں۔۔۔!!!

    #چوتھی بات حملہ آور نے مسجد کی باقاعدہ ایک پرفیکٹ ریکنگ کی ہوئی تھی اور جمع کے دن کو حملہ آور کی جناب سے سلیکٹ کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ حملہ آور نے دین اسلام کے اوپر کافی تحقیق رکھی ہوئی ہے جس کی بنا پر اسے معلوم تھا کہ جمعے کے دن مساجد میں مسلمانوں کی تعداد عام دنوں سے زیادہ ہوتی ہے۔۔!!!

    اب جب میں کچھ اہم حقائق آپ کے سامنے رکھ چکا ہوں تو تمام محب وطن پاکستانیوں کہ ذہن میں حملہ آور کی اصل تصویر بن چکی ہوگی کہ اس حملے کے پیچھے کون ہے جناب بات کچھ ایسی ہے کہ یہ شخص ایک ویل ٹرینڈ انٹلیجنس ایجنسی کا بندہ ہے جس نے نہایت اطمینان سے یہ سارا کام سر انجام دیا ہے انٹیلیجنس ایک بہت پچیدہ علم ہے اسے سمجھا عام انسان کی سوچ سے بہت اوپر ہے آپ کو سمجھانے کے لیے چند باتیں یہاں کہنا چاہوں جب بھی ایک ایجنٹ کسی ملک میں اپنے مشن کے لیے نکلتا ہے تو اسے باقاعدہ طور پر اس ملک کے رسموں رواج زبانوں بول چال کے طریقے سے آگاہ کیا جاتا ہے نیوزی لینڈ میں رہنے والے یہ شخص ناجانے کتنے عرصے سے اس مشن پر کام کر رہا تھا اور نجانے کتنی مسلمان مخالف ایجینسیوں کی اسے اس مشن میں حمایت حاصل تھی ۔۔۔!!!

    اس وقت مسلمانوں کے سب سے بڑے دوشمن صہیونی ہیں اور صہیونیت آپ کو دنیا کے ہر ملک میں ملے گی اور یہ بات بھی کہنا یہاں غلط نا ہوگا کہ یہ شخص صیہونیوں کا ایجنٹ ہے نیوزیلینڈ میں اس وقت جو انٹیلجنس ایجنسی ٹاپ پر ہے وہ ہے "ایس آئی ایس" (سیکیرٹ انٹلیجنس سیکیورٹی) پس پردہ اس انٹیلیجنس کی بھی اس حملہ آور کو حمایت حاصل ہو سکتی ہے اتنے بہادری سے اسے حملے کو سر انجام دینا اور باقاعدہ طور پر وڈیو بنانا اس ایجنسی کی سپورٹ کو ثابت کرتا ہے ۔۔۔!!!!

    اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے یہ حملہ کیوں کیا گیا جب کہ نیوزیلینڈ میں تو صیہونیوں کے کوئی مقاصد نہی پھر یہ حملہ نیوزی لینڈ میں کرنے کا مقصد ۔۔۔؟؟؟
    جناب بات کچھ ایسی ہے کہ اس حملے سے صیہونیوں نے ساری دنیا کی توجہ نیوزیلینڈ پر متوجہ کر کے غزہ میں براہ راست حملہ کیا ہے اور وہاں خون کی ندیاں بہا کر اپنے مقاصد کو حاصل کیا گیا ہے بڑی خوبصورتی سے گن کے اوپر ایک عرصہ پرانے واقع کو درج کر کے ہمیں بیوقوف بنایا گیا ہے ۔۔۔!!!

    اور ہم ایک عرصے سے اسی طرح بے وقوف بنتے آرہے ہیں ۔۔۔!!!!

    ہمیں اسی طرح گاجر مولیوں کی طرح کاٹا جا رہا ہے صیہونیوں نے تو کب سے مسلمانوں کے خلاف اعلان جنگ کر ڈالا ہے اور نائن ایلیون کا واقع اس جنگ کا اعلان تھا ہم تو اس وقت بھی نہی سمجھے اور آج بھی نہی سمجھ پا رہے کہ ہمارے ساتھ اصل میں ہو کیا رہا ہے ہم اسی دن سمجھیں گیں جب پانی ہمارے سر سے گزر چکا ہوگا ہم لوگ خود اپنے ہاتھوں سے ان صیہونی کتوں کے مقاصد میں انکی مدد کر رہے ہیں اور ہماری صفوں میں چھپے ان کتے کتیوں کا پہچاننے سے انکار کر رہے ہیں ۔۔۔!!!

    خدا کے لیے مسلمانوں ہوش کے ناخن لو خدا کے لے اپنی درست سمت کو تعین کرو خدا کے لیے اندرونی اور بیرونی طور پر ان کتوں کے خلاف ڈٹ جاؤ خدا کے لیے پیسوں کی خاطر اپنے ایمان کو بیچنا بندہ کرو ورنہ تمہاری داستان تک نا رہے گی داستانوں میں ۔۔۔!!!

    اور اسی طرح ظم و بربریت کی موت مرتے رہو گے ۔۔۔!!!

    کتوں کی غلامی سے اب خود کو آزاد کرنے کا وقت ہے اور انکی آنکھوں میں آنکھے ڈال کر انکی للکار کا جواب دینے کا وقت اور جب ایک مسلمان انکی آنکھوں میں آنکھ دلاتا ہے نا تو انکی شلوار گیلی ہو جاتی اب انکی شلواریں گیلی کرنے کا وقت ہے اور وہ صرف اور صرف انکی غلامی سے آزاد ہو کر اور خود کو اللہ کے دین کی طرف راغب کر کے ہی ممکن ہے ۔۔۔۔!!!

    ایک ہونے کا وقت ہے یہ ۔۔۔!!!

    وسلام پاکستان کا بیٹا ۔۔۔!!!

    #ONE5ONE

Leave a Reply